Skip to content Skip to sidebar Skip to footer

انبیا کی زندگیوں کا تبلیغی جائزہ

ڈاکٹر یوسف مصطفی الزھری

قرآن مجید نے بہت سارے چیزوں کا ذکر کیا جو سابقہ نبیوں کی اذانوں اور ان لوگوں کی اصلاحات ، معاشرے کی تعمیر اور وطن کو بدعنوانی کے طریقوں سے محفوظ رکھنے کے مطالبے سے متعلق ہیں۔ آخیری پیغام تک  اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے جس میں سابق انبیاء کی تبلیغ اور لو گو ں کی اصلا حات معاشر ے کی تعمیر اور وطن کو بد عنوانی کے حصے محفوظ رکھنے سے متعلق ہیں ۔ اور اللہ تعالی کا فرما ن ہے کہ نو ح کو حکم دیا گیا اور ہماری طر ف سے آپ پر نازل کیا گیا اور ہم نے ابراہیم ، مو سی ٰاور عیسیٰ کے دین کو قائم کرنے حکم دیا ۔ آپ اس میں تفریق نہ کریں مشرکین طر ف بڑھتے ہوئے آپ نے ان لو گو ں سے کہا۔

ایک اللہ کی عبادت کر و او راسکے  ساتھ کسی کو شریک نہ ٹھہراؤ  اور آپس میں متحد رہو۔

اور خد ا کے نبی شعیب علیہ السلام کی تبلیغ میں دی گئی معاشی اصلاح کی کیا ہی بات ہے ۔

اور خد اکےنبی لوط علیہ السلام کی دعو ت اور موحولیاتی اصلاحات کی بھی کیا بات ہے۔

اور اللہ کے نبی ہود و صالح علیہ السلام کی دعوت کے مطابق جنہوں نے ظلم و بر بریت کے خلاف اور طبقاتی نسل پرستی کے خلا ف جنگ کی۔

اس طرح اقتدار میں رہتے لوگو ں کا انفرادی طور پر ان کی بد عنوانیوں کا مقابلہ کرنا  مثال کے طور پر فر عون کی سرکشی اور قارون کا خزانہ  جو کہ بد عنوانی کے طور پر عوام میں اس کی مثال دی جاتی ہے ۔

یہ سب وہ قانونی حقائق ہیں جن کی تمام دعوتیں مشترک ہیں اور یہ وہی لوگ ہیں جو دعوت نامے اور پیغامات کی سفارش کرتے ہیں۔

Spread the love
Show CommentsClose Comments

Leave a comment