Skip to content Skip to sidebar Skip to footer

امام اکبر

بسم اللہ الرحمن الرحیم

عظیم قائد پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب شیخ الأزہر شریف

پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب بڑے امام جامع ازہر کے شیخ ( ازہر شریف کے مشائخ کی فہرست میں ۴۸ ویں ہیں) اس منصب پر ۱۹ مارچ ۲۰۱۰ ء سے ابھی تک ہیں، جامعۃ ازہر شریف کے سابق صدر ہیں، اور مصر کی سرزمین کے سابق مفتی، اور عقیدہ اسلامیہ ڈپارٹمنٹ کے پروفیسر، اور آپ دو زبانوں میں بات چیت پر ملکہ رکھتے ہیں فرانسی اور انگریزی، اور عربی زبان کے لحاظ سے بھی آپ اصلی عربی زبان جانتے ہیں، اور فرانسی کی کئی کتابوں کا عربی میں ترجمہ کیا اور ایک عرصہ تک فرانس میں لیکچرار کے منصب پر فائز رہے، آپ کی بہت سی تالیفات ہیں ان میں خاص کرفقہ شریعت اور تصوف اسلامی موضوعات شامل ہیں۔

ولادت اور تعلیم:

  • شیخ احمد الطیب ۶ جنوری ۱۹۴۶ ء بمطابق ۳ صفر ۱۳۶۵ ھ میں پیدا ہوئے، مراشدہ کے مرکز دشنا صوبہ قنا جمہوریہ عربیہ مصر کے جنوب  میں پیدائش،آپ ایسے خاندان سے ہیں کہ جن کا نسب امام حسن بن علی بن ابوطالب رضی اللہ عنہ تک پہنچتاہے۔
  • احمد الطیب صاحب جامعہ ازہر کے جڑے اور یہیں سے ۱۹۶۹ ء میں “عقیدہ اور فلسفہ” کی بی اے  ڈگری حاصل کی۔
  • ماسٹرز کی ڈگری ۱۹۷۱ ء میں حاصل کی اور ڈاکٹری ۱۹۷۷ ء میں “عقیدہ اور فلسفہ ” موضوع میں۔

علمی منازل:

  • شیخ الأزہر عرصہ (۱۹ مارچ ۲۰۱۰ ء سے دور حاضر تک)
  • جامعہ ازہر کی صدارت(۲۸ ستمبر ۲۰۰۳ ء سے ۱۹ مارچ ۲۰۱۰ تک)
  • جمہوریہ مصر العربیہ کے مفتی منصب پر (۱۰ مارچ ۲۰۰۲ ء سے ۲۷ ستمبر ۲۰۰۳ تک)
  • بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد پاکستان کے اصول الدین فیکلٹی کے ڈین بھی رہے ہیں۔
  • اسوان (مصر) میں کالج اسلامی اور عربی علوم (لڑکوں کے لئے) کے ڈین رہے۔
  • اور صوبہ قنا (مصر)میں لڑکوں کے کالج دراسات اسلامیہ اور عربیہ کے بھی ڈین رہے۔

تالیفات:

عظیم قائد  پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیبنے عقیدہ اور اسلامی فلسفہ میں کئی تالیفات کی ہیں،  اسی میں ان کی کئی تحقیقات ہیں، مندرجہ ذیل کچھ ذکر ہیں:

  • فلسفہ ابوالبرکات بغدادی کے بارے نقد۔
  • تفتازانی کی کتاب تہذیب الکلام کے الٰہیات کے حصے پر تعلیقات۔
  • مدخل لدراسة المنطق القديم۔
  • کتاب المواقف کے وجود اور ماہیت پر تحقیقات، تعارف اور مطالعہ۔
  • اسلامی اور مارکسی فلسفوں کی حرکات کا مفہوم (تحقیق)
  • اشعری کے پاس نطریہ علم کے اصول(تحقیق)
  • کتاب المواقف کے علت اور معلول کی مباحث: تعارف اور مطالعہ۔

ان میں علاقائی اور عالمی تنظیموں کی رکنیتکا اضافہ ہے،  اور ہر سطح پر اسلامی امت کے مسائل میں دلچسپی رکھتے ہیں اور حکومتی مختلف پروگراموں میں شرکت کرتے ہیں۔

Spread the love
Show CommentsClose Comments

Leave a comment